قوم سے بولے نواز، میں ڈر کر سیاست نہیں کرتا

قوم سے بولے نواز، میں ڈر کر سیاست نہیں کرتا

اسلام آباد.  پاکستان میں فوجی بغاوت کے خدشات اور پانامہ ليكس میں نام آنے کے درمیان ملک کے وزیر اعظم نواز شریف نے قوم کے نام پیغام جاری کیا ہے. اس میں انہوں نے کہا کہ پاناما ليكس کے بہانے پاکستان کو غیر مستحکم کرنے کی سازش رچی جارہی ہے.  شریف نے ملک سے کہا کہ میں ڈر کر سیاست نہیں کرتا.

قوم کے نام پیغام جاری کرتے وقت نواز کی باڈی لینگویج انتہائی تھکی ہوئی سی لگ رہی تھی. ان کے چہرے پر کشیدگی صاف دکھائی دے رہی تھی. انکے ہاو-بھاو بھی بالکل بدلے سے تھے. تاہم نواز گزشتہ کچھ وقت سے بیمار چل رہے تھے. اسی لئے وہ کچھ دن پہلے علاج کے لئے بیرون ملک بھی گئے تھے. پاناما ليكس پر نواز شریف نے کہا کہ اگر الزام ثابت ہوئے تو میں استعفی دے دوں گا. پاناما ليكس پر ہم نے خود انکوائری کمیٹی بنانے کا اعلان کیا. انہوں نے کہا کہ ليكس پر SC کے جج سے تحقیقات کمیٹی بنانے کا مطالبہ کروں گا.

عمران خان اور مشرف پر نشانہ سادھتے ہوئے نواز نے کہا کہ مجھے دکھ اس بات کا ہے کہ ملک کا قیمتی وقت برباد کیا گیا. اس کا حساب آپکو لینا ہے. یہ لوگ چاہتے ہیں کہ ملک کے مسائل کو ختم کرنے کے بجائے جھوٹے الزام میں وقت برباد کر دیں. ہم نے خود انکوائری کمیشن بنانے کا فیصلہ لیا. لیکن کمیشن کی راہ میں روڑے اٹكاے جا رہے ہیں.

نواز نے کہا کہ میں خدا کے علاوہ کسی سے نہیں ڈرتا. مجھے پاکستان کے لوگوں نے کیا ہے. میں اللہ کے بعد عوام کے تئیں جوابدہ ہوں. ہمارا خاندان ایک ایک پیسے کا حساب دیتا رہا ہے. ہم بھی حساب دیں گے، لیکن دھرنے کے دوران ملک کو جو کھربوں کا نقصان ہوا اس کا حساب کون دے گا. نواز شریف نے کہا کہ جو لوگ حساب مانگنے نکلے ہیں، پہلے ان کا حساب لیا جائے. 72 ججوں کو گھر میں نظربند کرنے کا حساب، مجھ پر هاجیكنگ کا جھوٹا کیس بنانے کا حساب. کیا ان کا حساب مانگا نہیں جانا چاہئے. ہماری حکومت کرپشن کے خاتمے میں یقین رکھتی ہے.