سعودی عرب، ایران کے درمیان ثالثی کی کوئی سرگرمی نہیں: الجبیر

سعودی عرب، ایران کے درمیان ثالثی کی کوئی سرگرمی نہیں: الجبیر

سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر کا کہنا ہے کہ سعودی عرب اور ایران کے درمیان پاکستان کسی قسم کی ثالثی نہیں کروا رہا ہے۔

الجبیر نے عرب-انڈیا تعاون فورم کے پہلے سیشن کے موقع پر صحافیوں سے بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ کچھ ممالک نے ریاض اور تہران کے درمیان ثالثی اور پیغامات بھجوانے کی آفر کی تھی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ایران کو معلوم ہے کہ اس سے کیا توقعات کی جارہی ہیں اور ایران کی جانب سے مثبت جواب نہ آیا تو کوئی ثالثی نہیں ہوگی۔"

سعودی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ "35 سال سے زائد عرصے سے ایران نے عرب ممالک کے اندرونی معاملات میں مداخلت، فرقہ واریت کے بیج بو کر اور دہشت گردی کی حمایت کر کے جارح نقطہ نظر اپنا رکھا ہے۔"

ان کا مزید کہنا تھا " ایران کواپنے ہمسایوں سے متعلق پالیسی اور حکمت عملی بدلنا ہوگی اور دوسرے ممالک کے اندرونی معاملات میں مداخلت سے گریز کرنا چاہئیے ہے تاکہ ہمسایہ ممالک سے بہتر تعلقات قائم کئے جائیں۔"