امریکہ-عراق میں سمارٹ بموں کی فروخت کا معاہدہ

امریکہ-عراق میں سمارٹ بموں کی فروخت کا معاہدہ

واشنگٹن: امریکی وزارت دفاع پینٹاگون نے عراق کو سمارٹ بموں، "ای آئی ایم" میزائلوں سمیت دوسرا گولا بارود فروخت کرنے کی منظوری دی ہے تاکہ بغداد اپنے 36 ایف سولہ جہازوں پر مشتمل فلیٹ کی جنگی صلاحیت کا بہتر تحفظ کر سکے۔

خبر کے مطابق اسلحہ خریداری کے اس معاہدے کی مالیت 95 ملین ڈالرز ہو گی جبکہ مجموعی طور پر عراق کو 2 ارب ڈالر کے سمارٹ بموں سمیت دیگر اسلحہ فروخت کیا جائے گا۔سیکیورٹی تعاون ایجنسی نے کانگریس کو آگاہ کیا ہے کہ شدت پسند تنظیم داعش کے خلاف جنگ کو کامیاب بنانے کے لئے عراق کو متذکرہ بالا اسلحہ کی ضرورت ہے۔ سیکیورٹی تعاون ایجنسی نے مزید بتایا کہ اسلحہ خریداری کی مجوزہ ڈیل کے تحت 400 امریکی فوجی 2020 تک عراق میں رہیں گے تاکہ وہ اسلحہ کی تربیت اور مرمت کا کام بھی ادا کر سکیں۔