امریکہ پاکستان کو اے ایچ ون زیڈ ہیلی کاپٹر فراہم کرے گا

امریکہ پاکستان کو اے ایچ ون زیڈ ہیلی کاپٹر فراہم کرے گا

امریکہ، پاکستان کے ساتھ فوجی اور دفاعی تعاون کے تحت نو ترقی یافتہ اے ایچ ون زیڈ ہیلی کاپٹر فراہم کرے گا۔

پاکستانی میڈیا کے مطابق حکومت امریکہ نے ہیلی کاپٹر بنانے والی کمپنی، بیل ہیلی کاپٹرز کو پاکستان کے لئے مذکورہ جنگی ہیلی کاپٹر تیار کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ امریکی محکمہ دفاع کی جانب سے جاری کئے گئے اعلامیے میں بھی اس خبر کی تصدیق کی گئی ہے۔ بیل ہیلی کاپٹر دیئے جانے کے اس کنٹریکٹ کی مالیت سترہ کروڑ، ایک لاکھ، تہتر ہزار ڈالر بتائی جاتی ہے۔ امریکی محکمہ دفاع کے اعلامیے میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ ہیلی کاپٹروں کی تیاری کا کام ستمبر دو ہزار اٹھارہ تک مکمل ہو گا۔

اے ایچ ون زیڈ دو انجن والا ہیلی کاپٹر ہے جو اے ایچ ون ڈبلیو سپر کوبرا ہیلی کاپٹر کا ترقی یافتہ ماڈل ہے اور دو سو پچاس میل فی گھنٹہ کی رفتار سے پرواز کر سکتا ہے۔ یہ ہیلی کاپٹر بھاری میزائل لے جانے اور حملہ کرنے کی بھی صلاحیت رکھتا ہے اور چار سو چھبیس میل کی حدود میں ہدف کو نشانہ بنا سکتا ہے۔

رواں برس کے شروع میں امریکہ نے پاکستان کو سات سو ملین ڈالر مالیت کے آٹھ ایف سولہ جنگی طیاروں کی فروخت کی بھی منظوری دی تھی۔

حکومت ہندوستان نے پاکستان کو ایف سولہ طیاروں کی فروخت پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے واشنگٹن کے اس فیصلے کو مایوس کن قرار دیا تھا۔ امریکہ نے ہندوستان کے اس اعتراض کو مسترد کر دیا تھا۔